1,028

برطانیہ شہری کو بدفعلی کے جرم میں‌سزا

لندن(نیوز ڈیسک)برطانوی عدالت نے متحدہ عرب امارات میں 6طالب علموں کے ساتھ بدفعلی کرنے پر ٹیچر پال شن کو 10 سال قید کی سزا سنائی ہے۔عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق متحدہ عرب امارات کے ایک برطانوی اسکول میں 49سالہ ٹیچر پال شن نے 8اور 9 سالہ دو طلبا کو زیادتی کا نشانہ بنایا جس پر 2019میں انہیں ملازمت سے برخاست کردیا گیا تھا۔ٹیچر پر الزام تھا کہ انھوں نے طلبا کو تحائف اور گھومنے پھرنے کی لالچ دیکر نہ صرف زیادتی کا نشانہ بنایا بلکہ ان کی نازیبا تصاویر بھی بنائیں اور بارہا بچوں کو برہنہ ہونے کا کہا۔ملازمت سے برطرف ہونے کے بعد برطانوی ٹیچر لندن پہنچا تاکہ قانونی چارہ جوئی سے بچ سکے تاہم ایک سال بعد ہی پولیس نے ٹیچر کو حراست میں لے لیا اور جنوری 2020 میں ایک جیوری نے 6بچوں سے زیادتی پر فرد جرم عائد کی ،برطانیہ میں ٹیچر پال شن کے خلاف مقدمہ جنسی جرائم ایکٹ کے سیکشن 72کے تحت چلایا گیا جو برطانوی شہریوں کے بیرون ملک کیے گئے جنسی جرائم کا مقدمہ برطانیہ میں چلانے کی اجازت دیتا ہے۔ عدالت نے گواہوں اور اعترافی بیان کی روشنی میں ملزم کو 10سال قید کی سزا سنا دی۔ کورونا پابندیوں کے باعث فیصلے میں دو سال کی تاخیر ہوئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں